poetry on gesu

  1. Maria-Noor

    Ghazal Bakhaire doosh par zulfen wo ab karne sitam nikle

    بکھیرے دوش پر زلفیں وه اب کرنے ستم نکلے جبینیں جُھکتی جاتی ہیں کہ اب باہر صنم نکلے پھساکر دامِ اُلفت میں ہمیں انجان بنتے ہیں ارے یہ بھولی صورت والے کتنے پُر ستم نکلے جفاؤں سے مجھے مارا اداؤں سے کیا گھاںٔل بہت نکلے تیرے ارماں لیکن پھیر بھی کم نکلے نزر بھر کر جنہیں دیکھا وہیں وه ہو گںٔے بسمل...
  2. Maria-Noor

    Ghazal Chehra in ka subha Roshan, gesu jaise kali raat

    چہرہ ان کا صبحِ روشن، گیسو جیسے کالی رات باتیں اُن کی سبحان اللہ، گویا قرآں کی آیات رُخ کا جلوہ پنہاں رکھا پیدا کر کے مخلوقات حُسنِ ظاہر سب نے دیکھا، کس نے دیکھا حُسنِ ذات جذبہ کی سب گرمی، سردی، بہتے اشکوں کی برسات ہم نے سارے موسم دیکھے، ہم پر گزرے سب حالات غم کی ساری چالیں گہری، بچتے بچتے آخر...
  3. Maria-Noor

    Ghazal Log yak rangi e wehshat se b uktYe hain

    راہی معصوم رضا لوگ یک رنگئی وحشت سے بھی اکتائے ہیں ہم بیاباں سے یہی ایک خبر لائے ہیں پیاس بنیاد ہے جینے کی بجھا لیں کیسے ہم نے یہ خواب نہ دیکھے ہیں نہ دکھلائے ہیں ہم تھکے ہارے ہیں اے عزم سفر ہم کو سنبھال کہیں سایہ جو نظر آیا ہے گھبرائے ہیں زندگی ڈھونڈھ لے تو بھی کسی دیوانے کو اس کے گیسو تو مرے...
  4. Maria-Noor

    Ashaar Zulfon se fizaon mein adhat ka sama

    زلفوں سے فضاؤں میں اداہٹ کا سماں مکھڑا ہے کہ آگ میں تراوٹ کا سماں یہ سوز و گداز قد رعنا! جیسے ہیرے کے منار میں گھلاوٹ کا سماں
  5. Maria-Noor

    Ashaar In ke gesu sanwerte jate hain

    ان کے گیسو سنورتے جاتے ہیں حادثے ہیں گزرتے جاتے ہیں
  6. Maria-Noor

    Ashaar Bikhri hui wo zulf isharoon mein keh gai

    بکھری ہوئی وہ زلف اشاروں میں کہہ گئی میں بھی شریک ہوں ترے حال تباہ میں
  7. Asad Rehman

    Ghazal Zulf baal kha rahi hai mathay par By Saghir Siddiqi

    وقت کی عمر کیا بڑی ہوگی اک ترے وصل کی گھڑی ہوگی دستکیں دے رہی ہے پلکوں پر کوئی برسات کی جھڑی ہوگی کیا خبر تھی کہ نوک خنجر بھی پھول کی ایک پنکھڑی ہوگی زلف بل کھا رہی ہے ماتھے پر چاندنی سے صبا لڑی ہوگی اے عدم کے مسافرو ہشیار راہ میں زندگی کھڑی ہوگی کیوں گرہ گیسوؤں میں ڈالی ہے جاں کسی پھول کی...
  8. Asad Rehman

    Ghazal Laila e Shab e Hijer ne Bikhra diye Gesu By Yagan Changaizi

    محروم شہادت کی ہے کچھ تجھ کو خبر بھی او دشمن جاں دیکھ ذرا پھر کے ادھر بھی ہے جان کے ساتھ اور اک ایمان کا ڈر بھی وہ شوخ کہیں دیکھ نہ لے مڑ کے ادھر بھی وہ ہم سے نہیں ملتے ہم ان سے نہیں ملتے اک ناز دل آویز ادھر بھی ہے ادھر بھی ٹھنڈا ہو کلیجا مرا اس آہ سحر سے جب دل کی طرح جلنے لگے غیر کا...
  9. Asad Rehman

    Ghazal Teray gesu ki shikan yad aye By Ahmad Nadeem Qasmi

    شام کو صبح چمن یاد آئی کس کی خوشبوئے بدن یاد آئی جب خیالوں میں کوئی موڑ آیا تیرے گیسو کی شکن یاد آئی یاد آئے ترے پیکر کے خطوط اپنی کوتاہیٔ فن یاد آئی چاند جب دور افق پر ڈوبا تیرے لہجے کی تھکن یاد آئی دن شعاعوں سے الجھتے گزرا رات آئی تو کرن یاد آئی احمد ندیم قاسمی @Recently Active Users @Veer
  10. Asad Rehman

    Ghazal Yad e gesu ne hijer ki shab , uljha uljha k mar dala By Bedam shah warsi

    پہلے شرما کے مار ڈالا پھر سامنے آ کے مار ڈالا ساقی نہ پلائی تونے آخر ترسا ترسا کے مار ڈالا عیسیٰ تھے تو مرنے ہی نہ دیتے تم نے تو جلا کے مار ڈالا بیمار الم کو تو نے ناصح سمجھا سمجھا کے مار ڈالا خنجر کیسا فقط ادا سے تڑپا تڑپا کے مار ڈالا یاد گیسو نے ہجر کی شب الجھا الجھا کے مار ڈالا فرقت میں...
Top
AdBlock Detected
Your browser is blocking advertisements. We're strongly asking to disable ad blocker while you're browsing in Pakistan.web.pk. You may not be aware but any visitor supports our site by just viewing and visiting ads.

آپ کے ویب براؤزر میں ایڈ بلاکر انسٹال ہے، مہربانی کرکے اسے پاکستان ویب پر ڈس ایبل رکھیں ۔ شاید آپ کو معلوم نہ ہو مگر سپانسر اشتہارات کو دیکھ کر ہی آپ پاکستان ویب کو سپورٹ کرتے ہیں۔ سپانسر اشتہارات سے ویب سائٹ کے اخراجات ادا کرنے میں تھوڑی سی ہی سہی مگر مدد ملتی ہے، اس لئے ابھی اپنے براؤزر کی آپشنز میں جاکر ایڈ بلاکر بند کر دیں، شکریہ

I've Disabled AdBlock    No Thanks