Ghazal Aag lagti hai kehn par tu dhuwan hota hai

sahrish khan

Star Pakistani
I Love Reading
Level
11
Awards
24
وہم ہی ہوگا مگر روز کہاں ہوتا ہے
دھندھ چھائی ہے تو اک چہرہ عیاں ہوتا ہے

شام خوش رنگ پرندوں کے چہک جانے سے
گھر ہوا جاتا ہے دن میں جو مکاں ہوتا ہے

وو کوئی جذبہ ہو الفاظ کا محتاج نہیں
کچھ نہ کہنا بھی خود اپنی ہی زباں ہوتا ہے

بے سبب کچھ بھی نہیں ہوتا ہے یا یوں کہیے
آگ لگتی ہے کہیں پر تو دھواں ہوتا ہے

بازگشت اور صداؤں کی ابھر آتی ہے
جتنا خالی کوئی اکھلیشؔ کنواں ہوتا ہے

اکھلیش تیواری​
 

Top