Ghazal Dekhiye-ahl-e-mohabbat hamen kyaa detay hain By Tabish Dehlvi

intelligent086

intelligent086

Star Pakistani
5,306
7,717
881
دیکھیے اہل محبت ہمیں کیا دیتے ہیں
کوچۂ یار میں ہم کب سے صدا دیتے ہیں

روز خوشبو تری لاتے ہیں صبا کے جھونکے
اہل گلشن مری وحشت کو ہوا دیتے ہیں

منزل شمع تک آسان رسائی ہو جائے
اس لیے خاک پتنگوں کی اڑا دیتے ہیں

سوئے صحرا بھی ذرا اہل خرد ہو آؤ
کچھ بہاروں کا پتا آبلہ پا دیتے ہیں

مجھ کو احباب کے الطاف و کرم نے مارا
لوگ اب زہر کے بدلے بھی دوا دیتے ہیں

ساتھ چلتا ہے کوئی اور بھی سوئے منزل
مجھ کو دھوکا مرے نقش کف پا دیتے ہیں

زندگی مرگ مسلسل ہے مگر اے تابشؔ
ہائے وہ لوگ جو جینے کی دعا دیتے ہیں​
 

Create an account or login to comment

You must be a member in order to leave a comment

Create account

Create an account on our community. It's easy!

Log in

Already have an account? Log in here.

Similar threads

intelligent086
    • Like
  • intelligent086
  • 4
  • 23
Replies
4
Views
23
Maria-Noor
Maria-Noor
intelligent086
    • Like
  • intelligent086
  • 4
  • 28
Replies
4
Views
28
Maria-Noor
Maria-Noor
Abdullah Nazeer
  • Abdullah Nazeer
  • 1
  • 23
Replies
1
Views
23
Abdullah Nazeer
Abdullah Nazeer
Abdullah Nazeer
    • Haha
    • Wow
  • Abdullah Nazeer
  • 3
  • 28
Replies
3
Views
28
Abdullah Nazeer
Abdullah Nazeer
Abdullah Nazeer
    • Haha
  • Abdullah Nazeer
  • 3
  • 25
Replies
3
Views
25
Abdullah Nazeer
Abdullah Nazeer
Top