Dismiss Notice
Today's Birthdays
Pakistan.web.pk would like to wish Happy Birthday to all its members who celebrate their birthday today

  • Asad Rehman
  1. intelligent086
    7

    intelligent086 Popular Pakistani

    گناہ سے بچنا

    عموماً گناہ کرنے کی چند بڑی وجوہات ہوتی ہیں۔ اﷲ تعالیٰ نے ان تمام وجوہات کے جوابات قرآنِ مجید میں ارشاد فرما دیئے ہیں۔گناہ کرنے کی ان وجوہات کا جواب قرآنِ مجید میں دینے کی وجہ یہ تھی کہ انسان گناہوں سے بچ جائے اور اپنے پروردگار کا فرمانبردار بندہ بن جائے، شیطان کی یہ کوشش ہوتی ہے کہ انسان کو گناہوں میں مست رکھے اور رحمن کی یہ کوشش ہوتی ہے کہ انسان ظاہر ہو یا پوشیدہ جو بھی گناہ کرتا ہے اس کو چھوڑ دے۔ اب بندے کو چاہئے کہ اپنے پروردگار کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے گناہوں بھری زندگی کو چھوڑ دے اور نیکیوں والی زندگی کو اختیار کرے۔

    ایک وجہ یہ ہوسکتی ہے کہ آدمی یہ سمجھتا ہے کہ مجھے گناہ کرتے وقت کوئی نہیں دیکھ رہا ، پروردگارِ عالم نے اس کا جواب یوں دیا ہے:

    ’’اِنَّ رَبَّکَ لَبِالْمِرْصَادِ‘‘
    کہ تیرا ربّ تیری گھات میں لگا ہوا ہے۔
    (سورۃ الفجر: آیت ۱۴)

    دوسری وجہ یہ ہوتی ہے کہ انسان سمجھتا ہے کہ میرے پاس کوئی نہیں ہے۔ اس کے جواب میں فرمایا کہ جب تم تین ہوتے ہو تو وہ چوتھا ہوتا ہے

    ’’وَہُوَ مَعَکُمْ اَیْنَمَا کُنْتُمْ‘‘
    کہ وہ تمہارے ساتھ ہوتا ہے تم جہاں کہیں بھی ہوتے ہو۔
    (سورۃ الحدید: آیت ۴)

    تیسری وجہ گناہ کرنے کی یہ ہوتی ہے کہ آدمی کے دل میں یہ احساس ہوتا ہے کہ میری حرکتوں کا کسی کو پتا نہیں چلا۔ جبکہ اﷲ تعالیٰ فرماتے ہیں

    ’’یَعْلَمُ خَآئِنَۃَ الأَعْیُنِ وَمَا تُخْفِی الصُّدُوْرُ‘‘
    قنیہ وہ جانتا ہے تمہاری آنکھوں کی خیانت کو اور جو تمہارے دلوں میں چھپا ہوا ہے۔
    (سورۃ مومن: آیت ۱۹)

    چوتھی وجہ گناہ کرنے کی یہ ہوتی ہے کہ آدمی یہ کہتا ہے کہ میں اگر یہ برائی کرتا بھی ہوں تو کوئی میرا کیا کر لے گا۔ جی ہاں! جب انسان باغی ہو جائے اور گناہ پر جرأت بڑھ جائے تو وہ بے شرم ہو کر ایسی باتیں کہہ دیتا ہے۔ اﷲ ربّ العزت اس کا بھی جواب دیتے ہیں۔ فرمایا

    ’’اِنَّ اَخْذَہٗ اَلِیْمٌ شَدِیْدٌ‘‘
    اس پروردگار کی پکڑ بڑی درد ناک اور بڑی شدید ہے۔
    (سورۃ الھود: آیت ۱۰۲)

    ’’وَلاَ یُوْثِقُ وَثَاقَہٗ اَحَدٌ‘‘
    ایسے باندھے گا کہ تمہیں ایسے کوئی دوسرا باندھ نہیں سکتا۔
    (سورۃ الفجر: آیت ۲۶)

    ’’فَاِنِّیْ اُعَذِّبُہٗ عَذَابًا لاَّ اُعَذِّبُہٗ اَحَدًا مِّنَ الْعَالَمِیْنَ‘‘
    میں پروردگار وہ عذاب دوں گا کہ جہانوں میں کوئی دوسرا عذاب دے نہیں سکتا۔
    (سورۃ المائدہ: آیت ۱۱۵)
     
    Tags:
    Veer and Maria-Noor like this.
  2. intelligent086
    7

    intelligent086 Popular Pakistani

  3. Maria-Noor
    6

    Maria-Noor Well-Known Pakistani I Love Reading

    @intelligent086
    ماشاءاللہ
    اللہ ہم سب کو ہدایت دے اور گناہوں سے بچنے کی توفیق عطا فرمائے
    بہت عمدہ انتخاب
    ہمارے ساتھ شیئر کرنے کا شکریہ
     
    intelligent086 likes this.
  4. intelligent086
    7

    intelligent086 Popular Pakistani

    @Maria-Noor
    پسند اور جواب کا شکریہ
    آمین یا رب العالمین
    جزاک اللہ خیراً کثیرا
     
    Maria-Noor likes this.
  5. Maria-Noor
    6

    Maria-Noor Well-Known Pakistani I Love Reading

    @intelligent086
    وَأَنْتُمْ فَجَزَاكُمُ اللَّهُ خَيْرًا
     
    intelligent086 likes this.
  6. Veer
    26

    Veer Famous Pakistani Staff Member

    intelligent086 and Maria-Noor like this.
  7. Maria-Noor
    6

    Maria-Noor Well-Known Pakistani I Love Reading

    وانتم فَجَزَاكُمُ اللَّهُ خَيْرًا
     
    intelligent086 likes this.
  8. intelligent086
    7

    intelligent086 Popular Pakistani

    ماشاءاللہ
    :)
     
    Maria-Noor likes this.
  9. intelligent086
    7

    intelligent086 Popular Pakistani

    @Veer جی
    وانتم فَجَزَاكُمُ اللَّهُ خَيْرًا
     
    Maria-Noor likes this.
Loading...