Ghazal Ju din tha ek musibat tu raat bhari thi by Amjad Islam Amjad

Ajwah

Ajwah

Popular Pakistani
I Love Reading
2,886
7,649
681
  • Engaged
  • Fastest 100
  • I love posting
  • Posting expert
  • Happy Anniversary!
  • Fast and Furious
  • A Star Is Born
  • I feel excited
جو دن تھا ایک مصیبت تو رات بھاری تھی
گزارنی تھی مگر زندگی، گزاری تھی

سواد شوق میں ایسے بھی کچھ مقام آئے
نہ مجھ کو اپنی خبر تھی نہ کچھ تمہاری تھی

لرزتے ہاتھوں سے دیوار لپٹی جاتی تھی
نہ پوچھ کس طرح تصویر وہ اتاری تھی

جو پیار ہم نے کیا تھا وہ کاروبار نہ تھا
نہ تم نے جیتی یہ بازی نہ میں نے ہاری تھی

طواف کرتے تھے اس کا بہار کے منظر
جو دل کی سیج پہ اتری عجب سواری تھی

تمہارا آنا بھی اچھا نہیں لگا مجھ کو
فسردگی سی عجب آج دل پہ طاری تھی

کسی بھی ظلم پہ کوئی بھی کچھ نہ کہتا تھا
نہ جانے کون سی جاں تھی جو اتنی پیاری تھی

ہجوم بڑھتا چلا جاتا تھا سر محفل
بڑے رسان سے قاتل کی مشق جاری تھی

تماشا دیکھنے والوں کو کون بتلاتا
کہ اس کے بعد انہی میں کسی کی باری تھی

وہ اس طرح تھا مرے بازوؤں کے حلقے میں
نہ دل کو چین تھا امجدؔ نہ بے قراری تھی

امجد اسلام امجد
 

Create an account or login to comment

You must be a member in order to leave a comment

Create account

Create an account on our community. It's easy!

Log in

Already have an account? Log in here.

Similar threads

Veer
  • Veer
  • 0
  • 17
Replies
0
Views
17
Veer
Veer
  • Veer
  • 0
  • 13
Replies
0
Views
13
Veer
Veer
  • Veer
  • 0
  • 54
Replies
0
Views
54
Veer
Veer
  • Veer
  • 0
  • 47
Replies
0
Views
47
Veer
Veer
  • Veer
  • 0
  • 36
Replies
0
Views
36
Veer
Top